بلاگ

کریپٹوکرنسی مائینگ

 

کریپٹوکرنسی مائینگ

کریپٹوکرنسی مائینگ ایک ایسا طریقہ ہے جس میں لین دین کو کریپٹوکرنسی فارم میں یقینی بنایا جاتا ہے اور ڈیجیٹل بلاک رجسٹر میں ڈالا جاتا ہے۔ اسکو کریپٹو کوائن مائینگ ، کونوس کوائن مائینگ اور بٹ کوائن مائینگ بھی کہا جاتا ہے ، بٹ کوائن کریپٹوکرنسی کی سب سے مشہور قسم ہے۔ کریپٹوکرنسی کے استعمال میں پچھلے کچھ سالوں میں اضافہ دیکھا گیا ہے

جب بھی کریپٹوگرافک لین دین ہوتی ہے، جس نے لین دین کی ہے وہ اس بات کا ذمہ دار ہوتا ہے کہ صحیح شناخت لے اور بلاک چین آپریشن کو اپ ڈیٹ کرے۔ مائینگ کے عمل میں پیچیدہ ریاضیاتی مشکلات شامل ہوتی ہیں جن میں ہیش کے فنکشن شامل ہوتے ہیں وہ لین دین کا ڈیٹا رکھتی ہیں۔

سب سے پہلا کریپٹوکرنسی مائنر کو کوڈ کو ڈی کوڈ کرتا ہے اسکو ٹرانزیکشن کا مختار بنا دیا جاتا ہے یہ اسکا انعام ہوتا ہے۔ کریپٹو مائینز خود بھی تھوڑی سی کریپٹوکرنسی کماتے ہیں۔ تاہم، دوسرے مائینرز کے مقابل ہونے کے لیئے ایک مائنر کو ایک اچھا کمپیوٹر اور خاص ہارڈ ویر چاہیے ہوتا ہے۔

کریپٹوکرنسی مائنر کے طورپر شروع کیسے کریں؟

کریپٹو کرنسی مائنرز بہت چھوٹا ریوینو کماتے ہیں کیونکہ بجلی، انٹرنیٹ کنکشن اور کمپیوٹر کے آلات کے اخراجات اس پر اثر انداز ہوتے ہیں۔

مائینگ شروع کرنے کے لیئے آپکو ایک اچھے ہارڈ ویئر کی ضرورت ہوگی جو کہ (GPU)اور (ASIC),کو چلا سکے، ہارڈ ویئر کولنگ کی صلاحیتیں، کریپٹو مائینگ کے لیئے سافٹ ویئر پیکچ اور انٹرنیٹ کا کنکشن اور آن لائن اور آف لائن کاموں کے لیئے ممبر شپ بھی درکار ہوگی۔

کریپٹو مائینگ کے خواہش مند حضرات کو یہ سوچ لینا چاہیے کہ یہ انڈسٹری اب بہت بڑی ہوچکی ہے اور بہت سے لوگ اور انڈسٹریز کے شامل ہونے سے اس میں مقابلہ بہت بڑھ گیا ہے۔

 

 

ur.counos.io 

کرپٹوکرنسی کیا ہے؟

کرپٹوکرنسی کیا ہے؟
کرپٹوکرنسی کیا ہے؟

 

کرپٹو کرنسی ( یا کرپٹوگرافی) ایک متنازعہ دیجیٹل اثاثہ ہےجس کو آپ کے لین دین ، اضافی مانیٹرینگ یونٹ اور اثاثوں کے انتقال کو محفوظ بنانے کے لیے بطور ایک رمزی ذریعہ ء تبادل کے طور پر تیّار کیا گیا ہے۔رمزی قیمتیں ( کرپٹو ویلیوز) دیجیٹل کرنسی، متبادل کرنسی اور ورچوئل کرنسی کی ایک قسم ہیں۔ کرپٹوکرنسیز کسی مرکزی الیکٹرونک منی سسٹم اور مرکزی بینک کی بجائے غیر مرکزی کنٹرول کا استعمال کرتی ہیں۔

ہر کرپٹوکرنسی کا غیر مرکزی کنٹرول بذیعہ بلوک چین (Block Chain ) کام کرتا ہے، جو پبلک ٹرانزیکشنز کی بنیاد ہے، جو ایک تقسیم شدہ ریکارڈ کے طور پر کام کرتا ہے۔

رسمی تعریف

Jan Lanksy کے مطابق ، crypto may ایک ایسا نظام ہے جو چار شرائط پوری کرے:

پالیسی یہ بیان کرے کہ کیا کرپٹوکرنسی کی نئی اکائیاں بنائی جا سکتی ہیں۔اگر کرپٹوکرنسی کی نئی اکائیاں بنائی جا سکتی ہیں تووہ نظام ان نئی اکائیوں کے ماٰخذ جو اِن کا مالک ہوگا اس کے مخصوص حالات کا تعین کرے گا ۔

اگر ایک جیسی کرپٹوگرافک اکائیوں کی خریداری کو تبدیل کرنے کے لیے دو الگ الگ ہدایات داخل کی جائیں تو نظام زیادہ سے زیادہ ان میں سے ایک پر عمل کرے۔

نظام اس انداز سے ٹرانزیکشنز کی اجازت دے کہ کرپٹوگرافک اکائی کا مالک تبدیل ہوسکے۔لین دین کی دستاویز صرف وہی ہستی جاری کر سکتی ہے جو ان اکائیوں کی حالیہ مالک ثابت ہوتی ہو۔

کرپٹوگرافک اکائیوں کی ملکیت رمزی طور پر مخصوص انداز سے دکھائی جا سکتی ہے۔

عمومی جائزہ

غیر مرکزی کرپٹوگرافی مجموعی طور پر کرپٹوگرافک خدمات کا مکمل نظام اس رفتار پر وضع کرتی ہے جس کا تعین اس نظام کی تخلیق کے وقت کیا گیا ہوتا ہے اور یہ عوامی سطح پر معلوم ہوتی ہے۔مرکزی بینکاری اور معیشتی پالیسیوں مثلاً فیڈرل ریزرو سسٹم میں، انتظامی کمیٹیاں یا حکومتیں رقم کی فراہمی کو زرِ مبادلہ کی اکائیوں کو چھاپنے یا تکمیلی دیجیٹل بْکس طلب کرنے کے عوامل سے کنٹرول کرتی ہیں۔ غیر مرکزی کرپٹوکرنسی کی صورت میں، حکومتیں یا کمپنیاں نئی اکائیاں پیدا نہیں کر سکتیں، اور پھر بھی وہ دوسری کمپنیوں ، بینکوں یا ایسی ہستیوں سے جو پراپرٹی ویلیو رکھتی ہوں ان سے مطابقت نہیں رکھتیں۔غیر مرکزی کرپٹوکرنسیز پر مبنی ابتدائی تکنیکی نظام ایک گروہ یا فرد کی جانب سے تیّارکیا گیا ہے جو کہSatoshi Nakamoto کے نام سےجانا جاتا ہے۔

مئی 2018 تک ، 1800 سے زائد کرپٹو ٹرانسپیرنٹ اسپیسی فیکیشنز(crypto transparent specifications) موجود تھیں۔ کرپٹو کرنسی، سیکورٹی، سالمیت، اور ریکارڈ بیلینس کرنے کا نظام باہمی طور پر مشکوک پارٹیوں کے ایک minors نام کے گروہ کے ذریعے قائم رکھا جاتا ہے جو کہ اپنے کمپیوٹرکا استعمال کر کے ٹرانزیکشنز کو ایک مخصوص ٹائم اسٹیمپ اسکیم کے تحت رجسٹری میں شامل کرتے ہوئے ٹرانزیکشن کے وقت کی تصدیق کرتے ہیں۔ زیادہ تر کرپٹوکاپیز کو اس طرح ڈیزائین کیا جاتا ہےکہ وہ آہستہ آہستہ گردشی coins کی کل مقدارکو محدود کر کے اس کرنسی کی پیداوار کو کم کر سکیں ۔ مالیاتی اداروں کی عمومی اور قابلِ لمس کرنسیز کے مقابلے میں کرپٹوکرنسی کے استعمال کر نے والے کو پکڑنا پولیس کے لیے مشکل ہو سکتا ہے۔یہ مسئلہ کرپٹوگرافک ٹیکنالوجیز کے استحصال سے پیدا ہوتا ہے۔

 

 

 

 

ur.counos.io 

  

پیر ٹو پیر کریپٹوکرنسی

اگر آپ ایک لچکدار ، محفوظ طریقے سے شناخت ظاہر کیئے بغیر لین دین کرنا چاہتے ہیں تو اسکے لییے آپکا کریپٹوکرنسی کو سمجھنا بہت ضروری ہے۔ جب پیر ٹو پیر بزنس درکار ہو تو اس کرنسی کے بہت سے فوائد ہوتے ہیں۔

اسطرح کی لین دین کے لیئے بنیادی ضروریات:

دو گروپوں کے درمیان اس قسم کے لین دین کے لیئے ، بلاک چین کی ضرورت ہوتی ہے۔ اسکے علاوہ کسی قسم کی تیسری پارٹی درکار نہیں ہوتی۔ سسٹم اپنی طرف سے مکمل محفوظ ٹرانزیکشن فراہم کرتا ہے ، حملہ آوروں کے لیئے سسٹم سے لڑنا تقریبا ناممکن ہے۔

لین دین کے لیئے ان طریقوں کا استعمال کسطرح فائدہ مند ہے؟

اسطرح لین دین کے بہت سے فوائد ہیں جن میں سے کچھ ہم نے بیان کیے ہیں۔

غلط استعمال کی اطلاع دیں: کریپٹوکرنسی میں لین دین کرنے والے ہر شخص کی شناخت منفرد ہوتی ہے۔ یہ انفرادیت ان کے نام اور پتے کے متعلق نہیں ہے۔ یہ شناخت ہر لین دین کے لیئے آسانی سے تبدیل کی جاسکتی ہے۔

 

والٹ: والٹ وہ جگہ ہے جہاں آپ اپنے سارے پیسے اسٹور کرسکتے ہیں کسی بغی قسم کی لین دین کے لیئے۔ اپنے والٹ کو محفوظ بنانے کے بہت سے طریقے ہیں۔ آپ اپنی اسکیورٹی کے لیِے پاسورڈ ، ان کرپشمز اور بہت سے حفاظتی اقدامات کرسکتے ہیں۔

محفوظ لین دین: آپ کریپٹوکرنسی کی سب سے محفوظ ٹرانزیکشن کرسکتے ہیں۔ پوری دنیا میں پھیلا ہوا ایک نیٹ ورک تمام لین دین پر نظر رکھتا ہے۔ یہ کسی تیسری پارٹی سے ماتحت نہیں ہوتی اسلیئے آپ دو گرہوں کے مابین ایک مکمل محفوظ لین دین کرسکتے ہیں۔

لین دین محفوظ اسلیئے ہے کیونکہ اس میں پیسے کسی سی لیئے نہیں جاتے۔ ہزاروں چیکنگز کے بعد کوئی بھی لین دین کی جاتی ہے۔ اگر کچھ انہونی دیکھیں تو لین دین فورا روک دی جاتی ہے۔ یہ کہا جاتا ہے کہ یہ لین دین کریڈٹ کارڈ سے زیادہ محفوظ ہے۔

آٹو میڈڈ لین دین:

اسمارٹ کانٹیکٹ کو استعمال کرکے اس قسم کی پیر ٹو پیر لین دین کی جاسکتی ہے۔ اس کے اصول آپ خود ترتیب دیتے ہیں۔ جیسے کہ آپ ایک مخصوص رقم ایک مخصوص بینک میں ٹرانسفر کرنا چاہتے ہیں تو سسٹم خودبخود آپکی ہدایت پر عمل کرے گا۔

 

تیز ترین معاہدہ:

اسکو استعمال کرتے ہوئے آپکو بہت عرصہ پیسوں کے لیئے انتظار نہیں کرنا پڑے گا۔ پیر ٹوپیر لین دین کا یہ طریقہ تیسری پارٹی کو پیچ میں سے نکال دیتا ہے اسلیئے آپ تیز ترین لین دین کرسکتے ہیں۔

آسان پے منٹ:

کریپٹوکرنسی کو استعمال کرتے ہوئے پے منٹ بہت آسان ہے۔ لین دین کو ممکن بنانے کے لیئے آپکو لینے والے کے والٹ ایڈریس کے علاوہ کوئی اور معلومات دینے کی ضرورت نہیں اور نہ ہی کوئی زائد فیس کی کٹوتی ہوتی ہے۔ رقم منٹوں میں منتقل ہوجاتی ہے۔

تو ، آپکو اندازہ ہوگیا ہوگا کہ کریپٹوکرنسی کو استعمال کرکے آپ کتنی آسانی سے پیر ٹو پیر ٹرانزیکشن کرسکتے ہیں۔

what is the meaning of Blockchain???

what is the meaning of Blockchain???

بلاک چین ایک منفرد ایجاد ہے: ایک آدمی کا برین چائلڈ یا آدمیوں کا گروہ ساٹوشی ناکاموٹو کہلاتا ہے۔ لیکن اس نے مزید اہمیت اخیتارکی ہے اور جو مرکزی سوال پوچھا جاتا ہے وہ یہ ہے کہ : بلاک چین کیا ہے؟

یہ ڈیجیٹل ڈیٹا کی تقسیم کی اجازت دیتا ہے لیکن کاپی کی نہیں، بلاک چین ٹیکنالوجی نے نئے طرز کے انٹرنیٹ کی ریڑھ کی ہڈی تخلیق کی ہے۔ پہلے پہل یہ ٹیکنالوجی بٹ کوائن کے لیئے تیار کی گئی تھی لیکن اب اس ٹیکنالوجی کے نئے فوائد تلاش کر لیئے گئے ہیں۔

بٹ کوائن کو '' ڈیجیٹل گولڈ '' کہا جاتا ہے اور اسکی ایک وجہ ہے۔  اس کرنسی کی ٹوٹل ویلیو نو بلین یوایس ڈالر ہے اور بلاک چینز اور طرح کی ہندسی ویلیوز بھی بنا سکتے ہیں۔  انٹرنیٹ کی طرح ، آپکو یہ جاننے کی ضرورت نہیں کہ بلاکرز کسطرح اسکو استعمال کرتے ہیں۔ تاہم، اس ٹیکنالوجی کی بنیادی تعلیم آپکو بتاتی ہے کہ اسکو انقلابی کیوں سمجھا جاتا ہے؟

بلاک چین کا استحکام اور مضبوطی

بلاک چین ٹیکنالوجی انٹرنیٹ کی طرح ہے جو اسکی مضبوطی سے مربوط ہے۔ ایک جیسے بلاکس کی معلومات آپکے نیٹ ورک میں اسٹور کرتا ہے۔ بلاک چین میں:

  1. ناکامی کا کوئی نقطہ نظر نہیں ہے
  2. ایک ادارے کی طرف سے کنٹرول کیا جا سکتا ہے

بٹ کوائن 2008 میں ایجاد ہوا تھا، اس کے بعد سے بٹ کوائن نے بغیر کسی بڑی روکاوٹ کے کام کیا ہے۔) اب تک بٹ کوائن کے ساتھ جو مسائل پیش آئے ہیں وہ ہیکرز کی طرف سے ہیں یا پھر مینجمنٹ کی لاپروائی کی وجہ سے ہیں، دوسرے الفاظ میں اب تک کی غلطیاں انسانوں کی طرف سے ہیں، اسکے بنیادی سسٹم میں کوئی مسئلہ نہیں ہے( انٹرنیٹ خود تیس سال پرانا ہے لیکن بلاک چین ٹیکنالوجی تو ابھی بھی نشوونما کے عمل سے گزر رہی ہے۔

بلاک چین ٹیکنالوجی کا استعمال کون کرے گا؟

ویب اسٹرکچر کے طور پر، آپکو بلاک چین کے بارے میں زیادہ جاننے کی ضرورت نہیں ہے۔  فی الحال، فنانس ٹیکنالوجی کے استعمال کے سب سے زیادہ موثر مقدمات پیش کرتا ہے۔ ورلڈ بینک کا تخمینہ ہے کہ 2015میں 430ملین ڈالر سے زیادہ ترسیلات بھیجی گئی اور اب ڈیوپمینٹل انجیںئرز کے لیئے سب سے زیادہ مطالبہ ہے۔

بلاک چین عموما اس قسم کی لین دین کے لیئے درمیانی پارٹیوں کو کم کردیتا ہے۔ ذاتی کمپیوٹنگ عام لوگوں کے زیادہ استعمال میں آگئی ہے اسلیئے گرافک یوزر انٹرفیس انونٹری کو ذرا سا تبدیل کرکے عام لوگوں کے لیئے ڈیسک ٹاپ بنایا گیا ہے۔ اور بلاک چین کے لیئے سب سے زیادہ بنائی جانے والی گرافک یوزر انٹرفیس کو اسی طرح بنایا جاتا ہے۔ لوگ بٹ کوائن سے اشیا خرید کر اسکو کریپٹوسکلچرز میں جمع کرتے ہیں۔

آن لائن ٹرانزیکشن شناخت کا عمل پورا ہونے کے بعد عمل میں آتی ہیں۔ یہ تصور کرنا آسان ہے کہ آجکل کی پورٹیبل اپلیکیشنز آنے والے سالوں میں شناخت کی مینجمنٹ میں تبدیل ہوجائیں گی۔

 

ur.counos.io

کریپٹوکرنسی کی بنیاد

کریپٹوکرنسی کی بنیاد

کریپٹوگرافی ) کریپٹولوجی نہیں، جس میں کریپٹوگرافی اور کریٹ انالاسس ہوتی ہیں( رضیاتی نقطہ نظر سے ایک ایسی اسٹڈی ہے جس میں انکرپشن ہوتی ہے۔ جو کوئی راز کی بات بتانے کے لیئے استعمال ہوتی ہے، اگر کوئی سن رہا ہو تو یہ ایک انکرپٹڈ پیغام دیتی ہے جو کہ سب کو سمجھ نہیں آتا۔ صرف ڈی کوڈر اسکو سمجھ سکتا ہے۔ جیسا کہ آپ سے ذکر کیا گیا ہے کہ آپ اس قسم کی اور اشیا بھی کرسکتے ہیں رجسٹر کر کے۔ لیکن جہاں پری ڈی کرپٹڈ) میری اصطلاح ( کچھ ہے، دوسرے لوگوں کو جو کہ کریپٹو گرافی سے منسلک ہیں ظاہر کرتا ہے کہ آپ نے کچھ سائن کیا ہے۔

تو، کریپٹو گرافی خفیہ جگہوں پر استعمال ہوتی ہے۔ جو کہ ڈیٹا تک رسائی رکھتے ہیں آپ انکو محدود کرسکتے ہیں۔ یہ پیغامات بھیجنے کے لیئے بہت کارآمد ہے، جو یہ یقین دلاتا ہے کہ صرف پیڈ کسٹمر ہی ڈیٹا کو دیکھ سکیں اور اس تک رسائی حاصل کرسکیں۔

یہ کسی دوسرے راستوں میں بھی سکیورٹی فراہم کرسکتا ہے۔ کچھ ڈراک نیٹ ورک خاص طور پر فری نیٹ اپنی معلومات ظاہر نہیں کرتے۔ ہر یوز اپنے کمپیوٹر پر ڈیٹا اسٹور کرتا ہے، تاکہ اس کے ختم ہونے سے نیٹ ورک سے ڈیٹا ختم نہ ہو۔ رپورٹ کو ڈاون لوڈ کرنے کے بعد اسکو مٹانا تقریبا نا ممکن ہوجاتا ہے۔ غیر قانونی کانٹینٹ کے لیئے آپ اسکو کمپیوٹر میں بغیر علم میں لائے فید کرسکتے ہیں۔ اگر ایک بار ڈیٹا فیڈ ہوجائے تو آپکو اسکی فکر نہیں کرنی چاہیے کہ یہ غیر قانونی ہے۔ جان بوجھ کر ڈیٹا تک پہنچنے کی کوشش نہ کریں۔

بٹ کوائن کے ساتھ آپ کریپٹوگرافک ایپلیکیشز بھی دیکھ سکتےہیں

) تاکہ آپ دوسرے لوگوں کو ای میل بھیج سکیں غیر متعلقہ لوگوں کے پڑھے بغیر

آخرکار میں کہہ سکتی ہوں کہ منفرد پاسورڈ آجکل کا نیا ٹرینڈ ہیں۔ میرے پاس ایک کی چین ہے ، جو کہ سسٹم سے کنکٹ کرتی ہے جب بھی مجھے نیا پاسورڈ درکار ہوتا ہے۔  صرف 64000 بے ترتیب پاسورڈ موجود ہوتے ہیں تو ہیکر کو ان تک پہنچنا مشکل لگتا ہے اور وہ پاسورڈ بھی چرا نہیں سکے گا جو کہ اس نے پہلے لگا دیا ہے۔ ایک دفعہ لگ گیا تو دوبارہ اسکا کوئی فائدہ نہیں۔

کریپٹوگرافی کا استعمال:

ابھی تک آپکو سمجھ تو آہی گیا ہوگا کہ کریپٹوکرنسی ایک آرٹ ہے جس میں معلومات صرف مطلوبہ بندے تک ہی پہنچائی جاتی ہے۔  معلوماتی دور سے پہلے ، کریپٹوگرافی صرف معلومات کے تبادلے کے لیئے استعمال ہوتی تھی۔ ان کریپشن صرف جاسوس ، آرمی والے استعمال کرتے تھے۔  یہ طریقے کار پرانے مصری زمانوں سے لے کر ابھی تک استعمال ہورہے ہیں۔ جب کمپیوٹرز آئے تو انہوں نے بھی کریپٹوانالاسس میں کردار ادا کیا۔

 

ur.counos.io